Politicians and Election, Vote in Freedom, Actively Participate in Democracy, Vote for Change, Online referendum
left right close

Pervez Musharraf

> Pakistan > Politicians > All Pakistan Muslim League > Pervez Musharraf
Pervez Musharraf is ready for your opinion, support and vote. Vote online NOW!
APML
 
photo پرویز مشرف

پرویز مشرف - for

ایک ریٹائرڈ پاکستانی جنرل چار اسٹار اور سیاستدان ہے. | Is a retired Pakistani four-star general and politician.
 NO! پرویز مشرف

پرویز مشرف - against

پر کلک کریں ، اگر آپ کو پرویز مشرف کی حمایت نہیں کرتے. باتیں کیوں کہتے ہو. | Click, if you do not support Pervez Musharraf. Say why.

Online election results for "پرویز مشرف " in graph.

graph
Graph online : Pervez Musharraf
Full functionality only if Javascript and Flash is enabled
> Pervez Musharraf >

Biography

[+] ADD

URD:

 

جنرل (ر) پرویز مشرف (پیدائش: 11 اگست 1943ء، دہلی) پاکستان کے دسویں صد‏‏ر تھے۔ مشرف نے 12 اکتوبر 1999ء کو بطور رئیس عسکریہ ملک میں فوجی قانون نافذ کرنے کے بعد وزیر اعظم نواز شریف کو جبراً معزول کر دیا اور پھر 20 جون 2001ء کو ایک صدارتی استصوابِ رائے کے ذریعے صدر کا عہدہ اختیار کیا۔ جس سے قبل آپ ملک کے چیف ایگزیکٹو (chief executive) کہلاتے تھے۔ مشرف نے 18 اگست 2008ء کو اپنے نے قوم سے خطاب کے دوران اپنے استعفیٰ کا اعلان کیا۔ انہوں نے متواتر آئین کی کئی خلاف ورزیاں کیں اور علی الاعلان اس کو مانا۔

 

ریفرینڈم 2002

20 مئی 2000 میں عدالت عظمیٰ پاکستان نے جنرل پرویز مشرف کو حکم دیا کہ وہ اکتوبر 2002 تک انتخابات کروائیں۔ اپنے اقتدار کو طول دینے اور محفوظ کرنے کی غرض سے انہوں نے 30 اپریل 2002 میں ایک صدارتی ریفرینڈم کروایا۔ جس کے مطابق 98 فیصد عوام نے انہیں آئندہ 5 سالوں کے لیے صدر منتخب کر لیا۔ البتہ اس ریفرینڈم کو سیاسی جماعتوں کی اکثریت نے مسترد کر دیا اور اسکا بائیکاٹ کیا۔ جنرل پرویز مشرف نے اپنے اقتدار کے راستے میں آنے والے بہت سے عہدیداروں کو بھی ہٹایا جن میں عدالت عظمیٰ کے منصفین حضرات اور بلوچستان پوسٹ کے ایڈیٹر بھی شامل ہیں۔

 

اکتوبر 2002 عام انتخابات

اکتوبر 2002 میں ہونے والے عام انتخابات میں پاکستان مسلم لیگ (ق) نے قومی اسمبلی کی اکثر سیٹیں جیت لیں۔ یہ جماعت اور جنرل پرویز مشرف ایک دوسرے کے زبردست حامی تھے۔ دسمبر 2003 میں جنرل پرویز مشرف نے متحدہ مجلس عمل کے ساتھ معاہدہ کیا کہ وہ دسمبر 2004 تک وردی اتار دیں گے لیکن انہوں نے اپنے اس وعدے کو پورا نہ کیا۔ اس کے بعد جنرل پرویز مشرف نے اپنی حامی اکثریت سے قومی اسمبلی میں سترہویں ترمیم منظور کروا لی جس کی رو سے انہیں باوردی پاکستان کے صدر ہونے کا قانونی جواز مل گیا۔

 

ستمبر 2007 نواز شريف كي واپسی

10 ستمبر 2007 كو جلاوطن مسلم ليگی رہنما مياں محمد نواز شريف سعودی عرب سے واپس پاکستان آئے لیکن مشرف حکومت نے ان کو کافی دیر جہاز میں روکے رکھا اور مبینہ طور پر دھوکے سے ایک دفعہ پھر سے جلاوطن کر کے سعوعدی عرب بھیج دیا۔ پاکستان کے سیاسی قائدین نے اس بات پر افسوس کا اظہار کیا۔ یورپی یونین نے بھی نواز شریف کے حق میں بیان دیا۔

 

دوسرا فوجی تاخت

3 نومبر 2007ء کو پرویز مشرف نے رئیس عسکریہ کی حیثیت سے دوسرا فوجی تاخت انجام دیا، جس کا مقصد اعلی عدالت کے ریاستی ادارے کی آزادی ختم کرنا تھا۔ نو سال بعد مشرف فوج کے سربراہ کے عہدے سے 28 نومبر 2007ء کو سبکدوش ہو گئے۔ 29 نومبر 2007ء کو پانچ سال کے نئے دور کے لیے صدر کا حلف اُٹھایا، جو عوامی اور سیاسی حلقوں میں متنازعہ ہے۔

 

صدارت سے استعفیٰ

پرویز مشرف نے 18 اگست، 2008 کو قوم سے خطاب میں اپنے مستعفی ہو نے کا اعلان کیا۔ اُن کی جگہ آئین کے تحت سینٹ کے چیئر مین میاں محمد سومرو نے عبوری صدر عہدہ سنمبھالا۔ پارلیمنٹ کو ایک مہینے کے اندر اندر نئے صدر کا انتخاب کرنا تھا۔ چنانچہ عام انتخابات 2008ء میں نئی حکومت کے بعد آصف علی زرداری نے نئے صدر کا حلف اٹھایا۔ بحیثیت صدر پرویز مشرف نے اپنی خود نوشت انگریزی میں بنام ان دی لائین آف فائر (انگریزی: In the Line of Fire) تحریر کی جس کو اردو میں سب سے پہلے پاکستان کے نام شائع کیا گیا۔ صدارت سے ہٹنے کے کچھ دیر بعد مشرف برطانیہ جا کر مقیم ہو گیا۔ 2011ء میں زرداری حکومت نے بے نظیر قتل مقدمہ کی تفتیش کی خاطر مشرف کو پاکستان واپس بھیجنے کا برطانیہ سے مطالبہ کیا جو کہ برطانیہ نے رد کر دیا۔

 

ذرائع

 

 

ENG:

 

Pervez Musharraf (Urdu: پرویز مشرف‎; born: 11 August 1943) is a retired four-star general and a politician who served as the tenth President of Pakistan from 2001 until 2008. Prior to that, he was the 13th Chief of Army Staff from October 1998 till November 2007, and was also the tenth Chairman of the Joint Chiefs of Staff Committee of Pakistan Armed Forces from 1998 until 2001. Commissioned in the Pakistan Army in 1964, Musharraf rose to national prominence after being appointed to the four-star general in October 1998 by then-Prime Minister Nawaz Sharif. Musharraf was the mastermind and strategic field commander behind the highly controversial and internationally condemned Kargil infiltration, which derailed peace negotiations with India. Previously, Musharraf played a vital role in the Afghan civil war, both assisting the peace negotiations and attempting to end the bloodshed in the country. After months of contentious relations with Prime Minister Sharif, Musharraf was brought to power through a military coup d'état in 1999, subsequently placing the Prime minister under a strict house-arrest before moving him to Adiala Jail in Punjab Province.

 

Restoration of national economy was one of his earliest initiatives. He appointed his close aide, Shaukat Aziz as Finance Minister. He secured the Presidential nomination in June 2001 and succeeded Rafique Tarar as the President of Pakistan. In the aftermath of the 11 September attacks in the United States, Musharraf closely allied with the United States and the allied powers in the War on Terror. After accepting the rulings of the Supreme Court, Musharraf became the first president to hold general elections nationwide. Appointing Zafarullah Jamali as Prime minister in 2002, Musharraf accepted his resignation in 2004 and approved the appointment of Shaukat Aziz as Prime Minister instead. Voluntarily surrendering the powers of chief executive and the authority to Shaukat Aziz whom Musharraf trusted, their rule was marred by controversies in the last two years, including the armed action in Red Mosque.

 

With Aziz constitutionally completing his term and the suspension of the Chief Justice in 2007, Musharraf dramatically fell from the presidency in 2008 after voluntarily resigning after facing threat of impeachment led by the elected opposition parties. Musharraf was in self-imposed exile in London, and returned ending his four years of self-imposed exile to take part in the May 11, 2013 general elections despite a Taliban death threat on 24 March 2013 to Pakistan. In his absence in Pakistan, the country's courts issued arrest warrants for him and Aziz for alleged involvement in the assassination of Benazir Bhutto and Akbar Bugti. Due to. his military dictatorship having a thin veneer of democratic governance, historian Ian Kershaw described Musharraf as among the worst modern dictators.

 

source

September 7, 2010

updated: 2013-03-25

ElectionsMeter is not responsible for the content of the text. Please refer always to the author. Every text published on ElectionsMeter should include original name of the author and reference to the original source. Users are obliged to follow notice of copyright infringement. Please read carefully policy of the site.

If the text contains an error, incorrect information, you want to fix it, or even you would like to mange fully the content of the profile, please contact us. contact us..


 
pervez musharraf popularity graph, argumentr with parvez musharraf, musharaf email, general pervez musharraf real height and more...
load menu